donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Khumar Barabankvi
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اک پل میں اک صدی کا مزہ ہم سے پوچھیئ&# *
اک پل میں اک صدی کا مزہ ہم سے پوچھیئے
دو پل کی زندگی کا مزہ ہم سے پوچھیئے

بھولے ہیں رفتہ رفتہ انہیں مدتوں میں ہم
قسطوں میں خود کشی کا مزہ ہم سے پوچھیئے

آغاز ِ عاشقی کا مزہ آپ جانیئے
انجام ِ عاشقی کا مزہ ہم سے پوچھیئے

ہنسنے کا شوق ہم کو بھی تھا آپ کی طرح
ہنسیئے ۔۔۔۔۔ مگر ہنسی کا مزہ ہم سے پوچھیئے
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 420