donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Krishan Bihari Noor
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* آگ ہے پانی ہے مٹی ہے ہوا ہے مجھ میں *
آگ ہے پانی ہے مٹی ہے ہوا ہے مجھ میں
اور پھر ماننا پڑتا ہے کہ خدا ہے مجھ میں

اب تو لے دے کے وہی شخص بچا ہے مجھ میں
مجھ کو مجھ سے جو جدا کر کے چھپا ہے مجھ میں

جتنے موسم ہیں سب جیسے کہیں مل جائیں 
ان دنوں کیسے بتاؤں جو فضا ہے مجھ میں

آئینہ یہ تو بتاتا ہے کہ میں کیا ہوں لیکن
آئینہ اس پہ ہے خاموش کہ کیا ہے مجھ میں

اب تو بس جان ہی دینے کی ہے باری اے نور
میں کہاں تک کروں ثابت کہ وفا ہے مجھ میں
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 566