donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* نہ جانے آئے کہاں صبح، گزرے شام کہا *
نہ جانے آئے کہاں صبح، گزرے شام کہاں
سفیر ہوں، مری  تقدیر میں قیام کہاں
 
ابھی تو دوستو! اس قافلے کا بچپن ہے
ابھی سے نظم_ بلاغت کا اہتمام کہاں
 
جہاں غموں کا تصور نہ ہو نہ خوشیوں کا
مرے سلوک میں وہ آخری مقام کہاں
 
دکھائی دیتے ہیں نظروں کو پھول یا کانٹے
 ہمارے ذہن میں پتوں کا احترام کہاں
 
سمیٹ لیجیے سامان_ آخرت جاوید
نہ جانے زیست کا ہو جائے اختمام کہاں
*****
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 492