donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* اقدار کا کسی کو یہاں پاس بھی نہیں *
غزل
 
 از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
 
اقدار کا کسی کو یہاں پاس بھی نہیں
اور پاس کی تو چھوڑیے، احساس بھی نہیں
 
احساس بار بار کے حملوں سے مر گیا
کیا آس کی ہو صبح، شب_ یاس بھی نہیں
 
اس بزم_ بے نیاز کی کیا قدر دل میں ہو
میرے وجود کا جسے احساس بھی نہیں
 
دریا بھی آس پاس ہے اور بحر بھی قریب
 افسوس یہ  کسی کو یہاں پیاس بھی نہیں
 
 جاوید بحر و بر میں فسادات ہیں بپا 
کوئی نہیں  خضر یہاں، الیاس بھی نہیں
**************
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 425