donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* جوبرا تھا بھلا ہوگیا *

غزل


از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
جوبرا تھا بھلا ہوگیا
جو بھلا تھا برا ہو گیا
 
زہر کیا گھل گیا خاک میں
ہر ثمر بے مزا ہو گیا
 
کیوں منائیں اسے بار بار
ہونے دو جو خفا ہو گیا
 
دل ہوئے مبتلائے نفاق
یہ مرض لا دوا ہو گیا
 
میں ہوں ڈوبا ہوا شرم سے
ہر کوئی بےحیا ہو گیا
 
ڈھک لیا ارض نے اس طرح
کہ قمر بے ضیا ہو گیا
 
یوں غموں کا چلا سسلہ
عشق کا غم ہوا ہو گیا
 
اس قدر فرق جاوید کیوں
کیا تھا تو اور کیا ہو گیا
۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 424