donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* طوفاں ہر ایک دل میں ہے حسرت کا شہر م&# *

غزل

ڈاکٹر جاوید جمیل
 
طوفاں ہر ایک دل میں ہے حسرت کا شہر میں
اترا ہے ایک حسن قیامت کا شہر میں

وعدوں کے انہدام کی تاریخ ہے طویل
تعمیر کیا محل ہو محبت کا شہر میں

ناراض ہوکے ہاتھ جھٹک کر چلے گئے
فالودہ خوب نکلا ہے عزت کا شہر میں

اندیشہ۶_ فساد سے ہر گھر میں خوف ہے
اک جن پھر رہا ہے شرارت کا شہر میں
(جن کے ن پر تشدید ہے)

ہر لب پہ یہ دعا ہے ہر اک دل میں یہ امید
آئے کوئی فرشتہ محبّت کا شہر میں

دولت کا گہرا ربط سیاست سے ہو گیا
فقدان ہر طرف ہوا برکت کا شہر میں

کر دوں اسے بھی تیرے تصور کے نام میں
مل جائے ایک لمحہ ہی فرصت کا شہر میں

جاوید تو نے کیسے کیا فتح اس کا دل
چرچا ہے خوب تیری ذہانت کا شہر میں
۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸۸

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 462