donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Dr Javed Jamil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* جاں! خفا ہو گئی *

غزل


ڈاکٹر جاوید جمیل

 
جاں! خفا ہو گئی؟
کیا خطا ہو گئی؟
 
گفتگو حسن سے
برملا ہو گئی
 
بے وفاؤں سے بھی
کچھ وفا ہو گئی
 
بے نیازی تری
بد دعا ہو گئی

گھٹتی تکلیف کیا
کچھ سوا ہو گئی
 
زندگانی مری
کیا تھی، کیا ہو گئی
 
تھی جو رسی مری
اژدھا ہو گئی
 
دل کی مظلومیت
بے نوا ہو گئی

دور_ نو میں ادا
بے حیا ہو اگی
 
معرفت صورتاً
واہمہ ہو گئی

ظلم، اب صبر کی
انتہا ہو گئی
 
اب یہ کمبخت انا
اک سزا ہو گئی

عشق_جاوید کی
ابتدا ہو گئی

۸۸۸۸۸

 

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 575