donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* قربتوں کی سرحدوں پر رسمیہ لکھا ہو *

 

 غزل
 
قربتوں کی سرحدوں پر رسمیہ لکھا ہوا
فاصلوں کے رنگ میں ہے تصفیہ لکھا ہوا
آرزوؤں کی چتائیں ہر طرف رکھی ہوئیں
اور در و دیوار پر ہے تخلیہ لکھا ہوا
دل کی تختی سے مٹا ڈالے گئے سارے حروف
ایک جملہ رہ گیا ہے عشقیہ لکھا ہوا
زندگی دے گی تجھے زخموں کا تیرے بھی حساب
مل ہی جائے گا تجھے بھی تجزیہ لکھا ہوا
اب قلم کاغذ کی حاجت کچھ نہیں باقی رہی
چہرہ چہرہ مل گیا ہے مرثیہ لکھا ہوا
گفتگو میں کیسی شامل ہوگیا عادل حیات
سب کی آنکھوں میں ہے تیرا عندیہ لکھا ہوا
 
*****************
 
 
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 375