donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* سفر کروں تو کبھی راستہ نہیں دیتا *

 

 غزل
 
سفر کروں تو کبھی راستہ نہیں دیتا
کوئی بزرگ بھی مجھ کو دعا نہیں دیتا
ہر ایک شخص کو رستہ دکھا تو دیتا ہے
کبھی کسی کو وہ اپنا پتا نہیں دیتا
مری زبان مرے ہی خلاف چلتی ہے
مرا ہی خون مجھے اب صدا نہیں دیتا
مکان بھی ہے وہی اور مکین بھی ہیں وہی
کبھی وہ آنکھ کو منظر نیا نہیں دیتا
فراق و وصل کی منزل کوئی نہیں ہوتی
دیے کیوں آنکھوں کے اپنی بجھا نہیں دیتا
بھنور خیال سے کیسے نکلتا میں عادل
یہاں کسی کو کوئی حوصلہ نہیں دیتا
 
***************
 
 
 
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 351