donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* نہاں جو وہ نظارا ہے، کہاں ہے *

 

غزل
 
نہاں جو وہ نظارا ہے، کہاں ہے
مری قسمت کا تارا ہے، کہاں ہے
ہمیں جو کھینچتا ہے اپنی جانب
کہاں منظر وہ سارا ہے، کہاں ہے
وہ سپنا روز جس کو دیکھتا ہوں
ترا ہی استعارا ہے، کہاں ہے
وہ میرے خواب میں آتا نہیں ہے
مگر کرتا اشارا ہے، کہاں ہے
بھنور کے ساتھ ہے پتوار لیکن
کہاں کوئی کنارا ہے، کہاں ہے
دعاؤں کا ثمر ملتا نہیں اب
مگر ٹوٹا ستارا ہے، کہاں ہے
مرے کانوں میں جو رہتا ہے عادل
وہ لہجہ کتنا پیارا ہے کہاں ہے
 
*****************
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 359