donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* حقیقت ہے، طرف داری نہیں ہے *

 

غزل
 
 
حقیقت ہے، طرف داری نہیں ہے
مری پہچان ہشیاری نہیں ہے
گھروں کے فاصلے تو کم ہوئے ہیں
مزاجوں میں ملنساری نہیں ہے
ڈھلا جاتا ہے سورج میرا لیکن
سفر کی کوئی تیاری نہیں ہے
کھلی ہیں کھڑکیاں کمرے کی پھر بھی
ہوا کا سلسلہ جاری نہیں ہے
گلی کوچوں میں بھی ملتی ہیں لاشیں
کہاں پر جنگ اب جاری نہیں ہے
اٹھاتا ہوں جسے میں زور عادل
وہ پتھر ہے مگر بھاری نہیں ہے
 
************
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 384