donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* یہ تیری دید کا منظر ہے، معجزہ تو نہ *

 

غزل
 
یہ تیری دید کا منظر ہے، معجزہ تو نہیں
کہ میرے ذہن کا یہ کوئی واہمہ تو نہیں
جو سرخ سرخ مناظر افق پہ بکھرے ہیں
نظر کا دھوکہ ہے یا کوئی حادثہ تو نہیں
وہ رہ گذر جو ترے گھر کی سمت جاتی ہے
وہ چاہتوں کا مری آخری سرا تو نہیں
نظر اسی کا ہمیشہ طواف کرتی ہے
رہِ حیات میں بکھرا وہ جابجا تو نہیں
مرے ہی کانوں میں جو گونجتی ہے رات گئے
مرے لبوں ہی سے نکلی ہوئی صدا تو نہیں
اسے ہی لوگ نظر بھر کے دیکھتے ہیں کیوں
کہ ظلمتوں میں وہی آخری دیا تو نہیں
قرار کیسے ترے دل کو آگیا عادل
جواب تیرے سوالوں کا کچھ ملا تو نہیں
 
*****************
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 416