donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* سچ کہا جلوہ شرار طور ہے *

 

غزل
 
سچ کہا جلوہ شرار طور ہے
ذات تو اس کی سراپا نور ہے
پھر صدائے جاں پہ صدیوں کی تھکن
پھر غموں سے دل مرا مہجور ہے
سامنے بچوں کے سر جھکتا نہیں
پر زمانے کا یہی دستور ہے
دیکھتا ہوں آنکھ میں اپنی مگر
دسترس سے وہ بہت ہی دور ہے
گوش سے میرے کبھی گزرا نہیں
قصّۂ جاں یوں بہت مشہور ہے
کس رہا تھا پھبتیوں پر پھبتیاں
آج وہ مجھ سے سوا مجبور ہے
لوٹ کر عادل میں جاؤں کس لیے
کھیت گاؤں میں، نہیں اک دھور۱؎ ہے
 
**************
۱؎  زمین کی پیمائش کی ایک اکائی، ۲۰ دھور ایک کٹھہ کے برابر
 
 
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 405