donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Adil Hayat
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* دیکھی ہے جب سے اس کی جھلک ہوش بھی نہ&# *

 

غزل
 
 
دیکھی ہے جب سے اس کی جھلک ہوش بھی نہیں
لگتا مگر ہے ایسا کہ مدہوش بھی نہیں
پھر بھی قدم ملائے ہوئے چل رہا ہوں میں
چہرہ تھکن سے چور ہے اور جوش بھی نہیں
اپنی زبان سے تو اسے کچھ نہ کہہ سکا
پر آنکھوں کی زبان میں خاموش بھی نہیں
حاصل ہے جو اسے وہ مقدر کا کھیل ہے
کس سے کرے وہ شکوہ کہ پاپوش بھی نہیں
رکھنا قدم سنبھال کے اس راہ میں حیات
کہنا نہ پھر کبھی کہ مرا دوش بھی نہیں
 
*********
 
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 405