donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Kalim Akhtar
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* ہیں آپ میرے ساتھ تو کیا ڈر لگے مجھے *

غزل

ہیں آپ میرے ساتھ تو کیا ڈر لگے مجھے
یہ آگ ایک پھول کا بستر لگے مجھے
ہے خار زار عشق میں ہر ہر قدم سراب
شبنم کی ایک بوند سمندر لگے مجھے
میری نظر میں دل ہے سنو عشق کا معبد
گرجا، گرودوارا، نہ مندر لگے مجھے
سنتے ہیں تیرے ذوق کا کچھ دائرہ نہیں
پھر کیا سبب کہ دل ترا محور لگے مجھے
محبوب کس کو جانئے، معشوق کون ہے؟
ہر آدمی یہاں کا ستمگر لگے مجھے
جگنو کہ ماہ و آئنہ یا چاندنی کہو
ہر چیز کائنات کی، اخترؔ لگے مجھے
****

 
Comments


Login

You are Visitor Number : 387