donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Khalid Malik Sahil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* تجھے اُس جہاں کی بندش، مجھے اِس جہ *
خالد ملک ساحل 

تجھے اُس جہاں کی بندش، مجھے اِس جہاں کی بندش 
مرے آسمان والے، مجھے خاکداں کی بندش 
کبھی اِس جہاں کی بندش کبھی لامکاں کی بندش 
میں جہاں جہاں سے نکلا مجھے اُس جہاں کی بندش 
میں زمانے گن رہا ہوں، میں فسانے چن رہا ہوں 
مرے لیکھ لکھنے والے، مجھے امتحاں کی بندش 
میں کہاں کہاں گرا ہوں، میں کہاں کہاں مرا ہوں 
کہیں دوستوں کی عزّت کہیں رفتگاں کی بندش 
مرا سلسلہ کہاں تک، مرا راستہ کہاں تک 
مری سرحدوں کے مالک، کبھی کھول جاں کی بندش 
مجھے بخش میرا چہرہ، مجھے بخش دے سراپا 
میں کہانیوں کا باسی مجھے داستاں کی بندش 
******
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 329