donateplease
newsletter
newsletter
rishta online logo
rosemine
Bazme Adab
Google   Site  
Bookmark and Share 
design_poetry
Share on Facebook
 
Khalid Malik Sahil
 
Share to Aalmi Urdu Ghar
* خُدا کے ہاتھ کا کیسے وہ مان رکھے گا *
بسم اللہ الرحمن الرحیم

خالد ملک ساحل

خُدا کے ہاتھ کا کیسے وہ مان رکھے گا
جو اپنے ہاتھ میں تیر و کمان رکھے گا
میں بے وجود ہوں میرا نشان رکھے گا
مری زمیں کو مر�آاسمان رکھے گا
مرا خُدا ہی بچائے گا ٹوٹنے سے مجھے
تلاشِ امن سے پہلے امان رکھے گا
خموشیوں کے سمندر میں بھی جزیرے ھیں
مری زباں پہ وہ اپنا بیان رکھے گا
میں اپنی مٹّی کا باغی نہیں مہاجر ہوں
مرے لیے تو وہ سارا جہان رکھے گا
مرے چراغ سے دنیا میں روشنی ہو گی
ہوائے خیر کو وہ پاسبان رکھے گا
مرے خُدا مرے بچّے کو زندگی دینا
وہ اگلی نسل میں مجھ کو جوان رکھے گا
مجھے یقین ہے اُس کے وجود پر ساحل
کسی ورق پہ مری داستان رکھے گا
*******
 
Comments


Login

You are Visitor Number : 356